38

ریکھا 69 سال کی ہو گئیں

ممبئی، بالی ووڈ کی مشہور اداکارہ ریکھا آج 69 برس کی ہو گئیں۔10 اکتوبر 1954 کو مدراس میں پیدا ہونے والی ریکھا (اصل نام بھانوریکھا گنیشن) کو اداکاری کا فن ورثے میں ملا۔ریکھا کے والد جیمنی گنیشن ایک اداکار اور والدہ پشپاولی ایک معروف فلمی اداکارہ تھیں۔ . گھر میں فلمی ماحول کی وجہ سے ریکھا کا جھکاؤ فلموں کی طرف ہوگیا اور وہ بھی اداکارہ بننے کے خواب دیکھنے لگی۔ ریکھا نے اپنے کیرئیر کا آغاز بطور چائلڈ آرٹسٹ 1966 میں ریلیز تیلگو فلم ‘رنگولا رتنم’ سے کیا۔
ریکھا نے بطور اداکارہ اپنے کیریئر کا آغاز کنڑ فلم ‘گوڈالی C.I.D 999’ سے کیا۔ فلم میں ان کے ہیرو کا کردار سپر اسٹار ڈاکٹر راجکمار نے ادا کیا تھا۔ریکھا نے فلم انجانا سے ہندی فلموں میں اداکاری کا آغاز کیا۔ طویل عرصے کے بعد یہ فلم دو شکاری کے نام سے ریلیز ہوئی۔ یہ فلم ٹکٹ کھڑکی پر ناکام ثابت ہوئی۔ بطور اداکارہ ان کا سینی کیریئر 1970 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘ساون بھادو’ سے شروع ہوا۔ فلم میں ان کے ہیرو کا کردار نوین نیسچل نے نبھایا۔
سال 1976 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘دو انجانے’ ان کے کیریئر کی اہم فلم ثابت ہوئی۔حقیقی معنوں میں بطور اداکارہ یہ ان کی پہلی فلم تھی۔ اس فلم میں انہیں پہلی بار امیتابھ بچن کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملا۔سال 1978 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘گھر’ ریکھا کے سینی کیریئر کے لیے ایک اہم فلم ثابت ہوئی۔ اس فلم میں ان کی زبردست اداکاری کے لیے انہیں پہلی بار بہترین اداکارہ کے فلم فیئر ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

سال 1980 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘خوبصورت’ ریکھا کی ایک اور سپر ہٹ فلم تھی۔ اس فلم میں ان کی زبردست اداکاری پر انہیں فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا۔

سال 1981 میں ریکھا کی ایک اور اہم فلم ‘عمراؤ جان’ ریلیز ہوئی۔ مرزا ہادی روسوا کے مشہور اردو ناول ‘عمراؤ جان’ پر مبنی اس فلم میں انہوں نے عمراؤ جان کا کردار ادا کیا۔ ریکھا نے اس کردار کو اتنی خلوص کے ساتھ نبھایا کہ آج بھی سینما کے شائقین اسے بھول نہیں پائے۔ اس فلم کے سدا بہار گانے آج بھی سامعین اور سامعین کو مسحور کرتے ہیں۔سال 1981 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘سلسلہ’ ریکھا کی قابل ذکر فلموں میں شامل ہے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یش چوپڑا کی ہدایت کاری میں بننے والی اس فلم میں امیتابھ بچن اور ریکھا کے رشتے کو سلور اسکرین پر پیش کیا گیا تھا۔ اگرچہ ٹکٹ کھڑکی پر یہ فلم زیادہ کامیاب نہیں ہوسکی تھی لیکن ناظرین اسے ان کی بہترین فلموں میں سے ایک سمجھتے تھے۔
سال 1988 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘خون بھری مانگ’ کا شمار ریکھا کی سپر ہٹ فلموں میں ہوتا ہے۔راکیش روشن کی ہدایت کاری میں بنی اس فلم میں ریکھا کو بہترین اداکارہ کے فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا۔ 90 کی دہائی میں ریکھا نے فلموں میں اپنا کام کافی حد تک کم کر دیا۔ 1996 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘کھلاڑیوں کا کھلاڑی’ میں انہوں نے گینگسٹر مایا کا کردار ادا کرکے شائقین کی داد حاصل کی۔ فلم میں ان کی زبردست اداکاری پر انہیں بہترین معاون اداکارہ کے فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا۔

ریکھا نے کئی فلموں میں اپنی بولڈ اداکاری سے ناظرین کو مسحور کیا ہے۔ ان فلموں میں اتسو، کامسوترا اور آستھا جیسی کئی فلمیں شامل ہیں۔ امیتابھ بچن اور ریکھا کا نام 1970 کی دہائی کے سب سے مقبول اور کامیاب فلمی جوڑوں میں آتا ہے۔ سال 2010 میں ریکھا کو پدم شری سے نوازا گیا۔ ریکھا نے اپنے چار دہائیوں کے طویل فلمی کیریئر میں تقریباً 175 فلموں میں کام کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں