45

آپ کے جسم میں ہونے والی تبدیلیوں کا مشاہدہ کرنا ضروری ہے

کینسر ابتدائی مراحل میں قابل علاج ہے لیکن جب کیس بگڑ جائے تو اس کا علاج نہیں کیا جا سکتا۔ یہی وجہ ہے کہ کینسر کو اس کے ابتدائی مراحل میں پکڑنا ضروری ہے۔ یہ سچ ہے کہ کینسر کے بہت سے کیسز کا ابتدائی مراحل میں پتہ نہیں چلتا۔ لیکن جسم پر کچھ ایسی نشانیاں نظر آتی ہیں جن سے آسانی سے پتہ لگایا جا سکتا ہے کہ یہ چیز کینسر کی ہو سکتی ہے۔ اس لیے ضروری ہے کہ آپ ہمیشہ چوکس رہیں اور اپنے جسم میں ہونے والی تبدیلیوں کا مشاہدہ کریں۔
امریکن کینسر سوسائٹی کے مطابق جسم میں ان نظر آنے والی تبدیلیوں کے علاوہ اگر بغیر کسی وجہ کے اچانک وزن میں کمی، ضرورت سے زیادہ تھکاوٹ، کھانے میں دشواری، بھوک نہ لگنا، پیٹ میں درد، آواز میں کھردری، مثانے کے مسائل شامل ہیں۔ اگر تبدیلیاں نظر آئیں، بخار، رات کو پسینہ آنا، دیکھنے یا سننے میں دشواری، تب بھی ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے۔ یہ دیگر بیماریوں کی علامات بھی ہو سکتی ہیں لیکن اگر ڈاکٹر کے پاس جا کر کینسر کا شبہ ہو تو ابتدائی مراحل میں ہی اس کی نشاندہی کی جا سکتی ہے۔
جسم میں یہ تبدیلیاں کینسر کی علامت ہوسکتی ہیں۔
1.جلد کی رنگت میں تبدیلی- اگر بغیر کسی وجہ کے جلد کی رنگت میں تبدیلی آجائے یا یہ کھرنڈ کی طرح بن جائے اور اس سے خون بہنے لگے تو یہ بھی کینسر کی علامت ہو سکتی ہے۔
2. جسم پر گانٹھ – امریکن کینسر سوسائٹی کے مطابق اگر جسم کے کسی حصے میں کوئی گانٹھ یا ابھری ہوئی جلد نظر آئے تو اسے کسی بھی قیمت پر نظر انداز نہ کریں۔ فوراً ڈاکٹر کے پاس جائیں۔ یہ سوجن کے طور پر بھی ظاہر ہو سکتا ہے۔ یہ کینسر کی علامات ہو سکتی ہیں۔
3.منہ میں تبدیلی۔اگر منہ میں بغیر کسی وجہ کے زخم ہو، خون بہہ رہا ہو، درد ہو یا وہ بے حس ہو جائے اور دوا کھانے کے باوجود ٹھیک نہ ہو، تو یہ بھی کینسر کی علامت ہو سکتی ہے۔ ہیں۔
4. تل کے رنگ میں تبدیلی – اگر جسم پر کہیں بھی تل موجود ہو اور اچانک اس کا رنگ بدل گیا ہو یا نیا تل بن گیا ہو تو یہ بھی کینسر کی علامت ہو سکتی ہے۔
5. جسم پر گانٹھ – امریکن کینسر سوسائٹی کے مطابق اگر جسم کے کسی حصے میں کوئی گانٹھ یا ابھری ہوئی جلد نظر آئے تو اسے کسی بھی قیمت پر نظر انداز نہ کریں۔ فوراً ڈاکٹر کے پاس جائیں۔ یہ سوجن کے طور پر بھی ظاہر ہو سکتا ہے۔ یہ کینسر کی علامات ہو سکتی ہیں۔

کیٹاگری میں : Health

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں