44

اناج سمجھوتے کی بحالی کے معاملے میں پُرعزم ہوں: گٹرس

نیویارک، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گٹرس نے کہا ہے کہ ہم بحیرہ اسود اناج راہداری سمجھوتے کی بحالی کے معاملے میں پُرعزم ہیں اور اس موضوع پر مذاکرات جاری رکھے ہوئے ہیں۔
گٹرس نے امریکہ کے شہر نیویارک میں اقوام متحدہ دفتر سے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ وہ آئندہ ہفتے متوقع اقوام متحدہ جنرل کمیٹی اجلاس میں ترکیہ کے صدر رجب طیب ایردوان، یوکرین کے صدر ولادی میر زلنسکی اور روس کے وزیر خارجہ سرگے لاوروف کے ساتھ الگ الگ مذاکرات کریں گے۔ اناج سمجھوتہ ان مذاکرات کے ایجنڈے کے موضوعات میں سے ایک ہو گا۔
سیکرٹری جنرل انتونیو گٹرس نے کہا ہے کہ ” میں اس بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا کہ میں بحیرہ اسود اناج راہداری سمجھوتے کے بارے میں پُر امید ہوں یا نااُمید۔ واحد چیز جو میں کہہ سکتا ہوں وہ یہ ہے کہ میں، اناج راہداری سمجھوتے کی بحالی کے بارے میں نہایت پُر عزم ہوں”۔
انہوں نے کہا ہے کہ “میں، روس پر عائد پابندیوں کی خلاف ورزی کئے بغیر، روس کی خوراک اور کھاد اور یوکرین کے اناج کی برآمدات کو بحال کرنے کے لئے ہر ممکنہ کوشش کروں گا”۔
یوکرین میں امن مذاکرات کے بارے میں گٹرس نے کہا ہے کہ “اگر مجھے ثالثی کا موقع فراہم کیا جائے تو میں اس کا خیر مقدم کروں گا لیکن میرا خیال ہے کہ ابھی ہم اس نقطے سے کافی دُور ہیں”۔
انتونیو گٹرس نے کہا ہے کہ ہم، یوکرین میں کسی بھی نوعیت کے امن کے ساتھ نہیں اقوام متحدہ کی شرائط اور بین الاقوامی قانون سے ہم آہنگ اور عادل امن کے ساتھ تعاون کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں