26

راجستھان میں بی جے پی کی حکومت آنے پر اب تک جو گھوٹالے ہوئے ہیں ان کی جانچ ہوگی: مودی

جھنجھنو: کانگریس کو بدعنوانی کی ماں بتاتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ اگر راجستھان میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حکومت بنتی ہے تو اب تک جتنے بھی گھوٹالے ہوئے ہیں ان کی تحقیقات کی جائیں گی اور قصورواروں کو سزا دی جائے گی۔ مسٹر مودی جھنجھونو۔وہ بی جے پی امیدوار کی حمایت میں ایک جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے الزام لگایا کہ وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت خود کو جادوگر کہتے ہیں اور اپنے جادو سے انہوں نے ریاست میں کرپشن کا ایسا جال بچھایا ہے کہ ریاست کی پوری عوام پریشانی کا شکار نظر آتی ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ راجستھان حکومت کی سرپرستی میں بھرتی کے امتحانی پرچے کا لیک ہونا عام ہو گیا ہے۔ یہاں پر پیپر لیک کرنے میں بڑے سیاسی لیڈروں کا تحفظ تھا۔ بڑے کوچنگ اداروں پر چھاپے مارے گئے تو وزیر اعلیٰ کے قریبی لوگوں کے نام سامنے آئے۔
جناب مودی نے کہا کہ کانگریس کرپشن کی ماں ہے۔جہاں بھی کانگریس کی حکومت ہوگی بدعنوانی اپنے عروج پر ہوگی۔ مرکز میں کانگریس کی حکومت نے 10 سال تک بڑے پیمانے پر بدعنوانی کی۔ ہماری پارٹی کی حکومت بننے کے بعد ہم نے کانگریس کی طرف سے شروع کی گئی بدعنوانی کے گندے نالوں کی صفائی شروع کر دی ہے اور آج ملک میں عام لوگوں کے بینک کھاتوں میں پیسہ براہ راست منتقل ہو رہا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے بھی عوام سے ہاتھ اٹھانے اور بی جے پی کے تمام امیدواروں کو جتوانے کی اپیل کی۔
انہوں نے کہا کہ انسان دوستی کی روایت شیخاوتی کی فطرت میں ہے، یہاں کے لوگ جو کچھ کماتے ہیں اسے واپس بھی کرتے ہیں۔آج ملک بھی شیخاوتی کی اس روایت کو اپنا رہا ہے۔ راجستھان کے پہلے اور ملک کے دوسرے پرم ویر چکر کے فاتح حوالدار میجر پیرو سنگھ شیخاوت کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شیخاوتی سمیت ملک کے بہادر سپاہیوں کی وجہ سے ہی ہندوستان کی سرحدوں کی حفاظت کی جا رہی ہے۔ یہاں کے بہادر سپاہی ملکی سرحدوں کی حفاظت میں کوئی کسر نہیں چھوڑتے۔ جب یہاں کے فوجی سرحدی علاقے کی حفاظت کرتے ہیں تو اہل وطن خوشی کی نیند سوتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ سابق فوجیوں کے مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم نے ون رینک ون پنشن کا مطالبہ پورا کر کے سابق فوجیوں کو بڑا ریلیف دیا ہے جو گزشتہ 40 سال سے زیر التوا تھا، بڑا ریلیف دیا ہے۔ اب تک، بی جے پی حکومت کی طرف سے ون رینک ون پنشن اسکیم کے تحت سابق فوجیوں کو تقریباً 90 ہزار کروڑ روپے ادا کیے جا چکے ہیں۔ مرکزی حکومت اب بھی فوجیوں کے ساتھ ہے اور ان کے تمام مسائل کو حل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

کیٹاگری میں : state

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں