28

آسیان چاہتا ہے کہ ہندوستان آر سی ای پی میں شامل ہو

جکارتہ، جنوب مشرقی ایشیائی ممالک کی تنظیم (آسیان) کے 10 رکن ممالک نے اپنی خواہش کا اظہار کیا ہے کہ ہندوستان کو علاقائی جامع اقتصادی شراکت داری (RCEP) میں شامل ہونا چاہیے۔آسیان کے رکن ممالک میں برونائی، کمبوڈیا، انڈونیشیا، لاؤس، ملائیشیا، میانمار، فلپائن، سنگاپور، تھائی لینڈ اور ویتنام۔انڈونیشیا کا دورہ کرنے والے ہندوستانی میڈیا کے وفد سے بات کرتے ہوئے آسیان کے سکریٹری جنرل ڈاکٹر کاؤ کم ہورن نے کہا کہ ایک جامع، کھلے اور قواعد پر مبنی تجارتی معاہدے سے تمام شراکت داروں کو فائدہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ RCEP میں شامل ہونے سے ہندوستان اور دیگر ممالک کو فائدہ ہوگا کیونکہ اس سے مزید منڈیاں ملیں گی اور تجارتی سودے باہمی ہیں۔
ہندوستان نے 2019 میں چین کی زیرقیادت RCEP سے یہ کہتے ہوئے واک آؤٹ کیا تھا کہ یہ فیصلہ مقامی صنعت اور قوم کے مفاد میں کیا گیا ہے۔اس وقت ایک سرکاری بیان میں کہا گیا تھا کہ معاہدے کا ڈھانچہ ہندوستان کے خدشات کو دور نہیں کرتا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ RCEP آسیان کے رکن ممالک اور پانچ دیگر ممالک آسٹریلیا، چین، جاپان، جنوبی کوریا اور نیوزی لینڈ کے درمیان ایک آزاد تجارتی معاہدہ ہے۔ یہ دنیا کے سب سے بڑے آزاد تجارتی معاہدوں (FTAs) میں سے ایک ہے، جو عالمی جی ڈی پی کا تقریباً 30 فیصد اور دنیا کی آبادی کا تقریباً ایک تہائی احاطہ کرتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں