66

عید سادگی سے منائیں اور ان پیسوں سے غرباء ومستحقین کی مدد کریں:مولانا خالد سیف اللہ رحمانی

نئی دہلی، (یو این آئی) مولانا خالد سیف اللہ رحمانی نے تمام مسلمان بھائیوں اور بہنوں سے اپیل کی ہے کہ اِس سال عید الفطر سادگی کے ساتھ منائی جائے ، عید کے دن مرد ہوں یا عورت یابچے ، پرانے دُھلے ہوئے کپڑے پہننے پر اکتفاء کریں۔یہ بات انہوں نے آج یہاں جاری ایک ریلیز میں دی ہے ۔ ریلیز کے مطابق انہوں نے کہاکہ نئے کپڑے اور نئے جوتے چپل خریدنے اور مارکیٹ میں جانے سے گریز کریں، آپ کے دوکانوں میں جانے سے سماجی دوری کے اصول ٹوٹ جائیں گے ، اس سے بیماری کے پھیلنے کا اندیشہ ہے ، نئے کپڑوں کے مقابلہ اپنی اور اپنے متعلقین کی صحت کو بچانا زیادہ اہم ہے ، اس کا سب سے بڑا نقصان یہ ہے کہ فرقہ پرست میڈیا جو اِن مشکل حالات میں بھی نفرت انگیز ایجنڈے کو آگے بڑھا رہا ہے ، وہ اس کو مسلمانوں کو بدنام کرنے اور اُن کے خلاف نفرت پھیلانے کے لئے استعمال کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ بعض شہروں میں جہاں کپڑوں کی دوکانوں کے لئے ڈھیل دی گئی ہے ، وہاں کے مقامی میڈیا نے یہ سلسلہ شروع بھی کر دیا ہے ، وہاں دوکان میں بیٹھی ہوئی برقعہ پوش خواتین کو چینل پر دکھایا جا رہا ہے ، اور یہ تأثر دیا جا رہا ہے کہ مسلمان ہی اس بیماری کے پھیلاؤ کا سبب ہیں۔ مولانا رحمانی نے مسلمانوں سے گزارش کی ہے کہ اس سال عید کے ممکنہ اخراجات کو بچا کر اُن غریب بھائیوں کی مدد کی جائے جو لقمہ لقمہ کے محتاج ہیں، اور ان کے گھروں میں فاقوں کی نوبت ہے ، نیز لاک ڈاؤن سے پہلے دہلی میں مسلمانوں کے خلاف جو فسادات برپا کئے گئے ، اُن میں بہت سی عورتیں بیوہ اور بچے یتیم ہوئے ، پورا محلہ ویران کر دیا گیا، مکانات منہدم کر دیے گئے ، دوکانوں کی آگ لگا دی گئی، اگر ہم پیسے بچا کر ایسے مظلوم بھائیوں بہنوں کی مدد کریں تو اس سے ان شاء اللہ روحانی سکون بھی حاصل ہوگا، آپ کو ان غریبوں کی دعاء بھی ملے گی اور یقیناََ آپ کا یہ عمل اللہ کے یہاں مقبول ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں