37

ریزرویشن نہیں بلکہ لالچ دینے والا بل:مایاوتی

لکھنؤ: خاتون ریزرویشن بل کے سلسلے میں حکمراں جماعت بی جے پی پر لوگوں کو گمراہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے بہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی)سپریمو مایاوتی نے کہا کہ یہ بل خواتین کو ریزرویشن دینے کے اردے سے نہیں لایاگیا ہے بلکہ آئندہ انتخابات سے پہلے خواتین کو لالچ دینے کے لئے لایا گیا ہے۔
مایاوتی نے بدھ کو کہا کہ خاتون ریزوریشن بل کے حمایت میں ان کی پارٹی اول دن سے ہے اور خواتین کو نمائندگی دینے والے اس بل کو فوری اثر سے نافز کرنے کی وکالت کرتی ہے لیکن حکومت کا یہ کہنا ہے کہ بل کو پاس ہونے کے بعد اسے فورا نافذ نہیں کیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ اس بل کے مطابق آنے والے 15۔16سالوں میں ملک میں خواتین کو ریزرویشن نہیں دیا جائے گا۔ اس بل کے پاس ہونے کے بعد اسے فورا نافذ نہیں کیا جا سکے گا۔ سب سے پہلے ملک میں مردم شماری کرائی جائے گی اور اس کے بعد سیٹوں کی حدبندی کی جائے گی۔
بی ایس پی سپریمو نے کہا کہ مردم شماری میں کافی وقت لگتا ہے۔ اس کے بعد ہی یہ بل نافذ ہوگا۔ اس سے صاف ہے کہ یہ بل خواتین کو ریزرویشن دینے کے ارادے سے نہیں لایا گیا ہے بلکہ آئندہ انتخابات سے پہلے خواتین کو لالچ دینے کے لئے لایا گیا ہے۔

کیٹاگری میں : state

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں