36

جنوبی کوریا میں امریکی فوجی منشیات کی اسمگلنگ میں پکڑے گئے

سیول، جنوبی کوریا میں یو ایس فورسز کوریا (یو ایس ایف کے) کے ہیڈکوارٹر میں امریکی فوجی فوجی ڈاک کے ذریعے منشیات اسمگل کرتے ہوئے پکڑے گئے ہیں۔
مقامی میڈیا نے بدھ کو پولیس کے حوالے سے یہ اطلاع دی۔ دارالحکومت سیول سے تقریباً 60 کلومیٹر جنوب میں پیونگ ٹیک جہاں 28,500 فوجیوں کے ساتھ امریکی فوج کوریا (یو ایس ایف کے) کا ہیڈ کوارٹر ہے وہاں سے پولیس نے 17 امریکی فوجیوں، چار جنوبی کوریائی اور ایک فلپائنی فوجی کو گرفتار کیا۔
حراست میں لیے گئے افراد میں ایک 33 سالہ فلپائنی فوجی اور 27 سالہ جنوبی کوریائی خاتون کو حراست میں لے کر الزامات کے تحت استغاثہ کے حوالے کر دیا گیا ہے۔
سترہ (17) امریکی فوجیوں اور تین جنوبی کوریائی باشندوں کو حراست میں لیے بغیر فرد جرم کے بارے میں استغاثہ کو مطلع کیا گیا ہے۔
ایک 24 سالہ امریکی سروس ممبر پر گزشتہ سال فروری اور اس سال مئی کے درمیان یو ایس ایف کے میل کے ذریعے 350 ملی لیٹر مصنوعی بھنگ کی غیر قانونی طور پر اسمگلنگ، تمباکو نوشی، فروخت اور یو ایس ایف کے فوجیوں اور دیگر افراد کو تقسیم کرنے کا الزام ہے۔
پلاسٹک کے کنٹینروں میں مائع مصنوعی بھنگ کے طور پر اسمگل کی جانے والی منشیات کو مائع الیکٹرانک سگریٹ سے الگ کرنا مشکل ہے۔ سیئول سے 40 کلومیٹر شمال میں واقع پیونگ ٹیک اور ڈونگ ڈوچیون میں زیر حراست خاتون اور پانچ دیگر افراد نے زیادہ تر اسمگل شدہ منشیات امریکی فوجیوں کو فروخت کیں۔
مقامی پولیس نے منشیات کی فروخت سے حاصل کیے گئے 12,850 امریکی ڈالر ضبط کر لیے۔ اس کے علاوہ 80 ملی لیٹر مصنوعی بھنگ اور دیگر مواد بھی برآمد کیا گیا۔ پولیس اسمگلنگ کے راستوں کی تفتیش جاری رکھنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں