8

پنجابی کو جموں وکشمیر میں سرکاری زبان کا درجہ ملے

نئی دہلی،کانگریس اور شرومنی اکالی دل کے اراکین نے بدھ کو راجیہ سبھا میں جموں و کشمیر کی سرکاری زبان میں پنجابی کو بھی شامل کرنے کا مطالبہ کیا۔
کانگریس کے پرتاپ سنگھ باجوا نے وقفہ صفر کے دوران کہا کہ پنجابی پہلے جموں و کشمیر کی سرکاری زبان میں شامل تھی لیکن اب نہیں ہے۔ہندی ،انگریزی، اردو، کشمیری اور ڈوگری کو سرکاری زبان کا درجہ دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب سے جموں و کشمیر کا گہرا رشتہ ہے اور یہ یہ مہاراجہ رنجیت سنگھ کے وقت سے ہے ۔
اکالی دل کے بلوندر سنگھ بھوندر نے بھی پنجابی کو سرکاری زبان کا درجہ دئے جانے کے مطالبے کی زوردار حمایت کرتے ہوئے کہا کہ کناڈا اور آسٹریلیا میں بھی پنجابی کو اہمیت کا مقام حاصل ہے ۔انہوں نے کہاکہ دنیا کے کئی ملکوں میں پنجابی بولی جاتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں