14

یوگی حکومت کسانوں کو غلام بنانا چاہتی ہے:اکھلیش

لکھنؤ: سماج وادی پارٹی(ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے بدھ کو الزام لگایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی ) حکومت زرعی آرڈیننس کے ذریعہ کسانوں کو بڑے بڑے تاجروں کا محتاج بنانا چاہتی ہے۔
مسٹر یادو نے یہاں جاری بیان میں کہا کہ بی جے پی حکوم ت214 سے ہی کسانوں کو نظر انداز کرتی آئی ہے۔زمین کی حصولیابی کی کوشش کے بعد اب بی جے پی زرعی آرڈیننس کے ذریعہ کسانوں کو بڑے بڑے کاروباریوں کا محتاج بنانا چاہتی ہے بی جے پی کسانوں کا کم از کم سہارا قیمت تو دلا نہیں پائی اس نے ضروری اشیاۓ ایکٹ سے ہی کئی فصلوں کو باہر کردیا۔
گنا کسانوں کے ابھی تک 13ہزار کروڑ روپئے کی ادائیگی نہیں کی گئی ہے۔ کسانوں کی پیداوار کو نئے قانون کے سہارے بڑی کمپنیاں اور بڑے کاروباری من چاہے طریقے سے خریدیں گے۔بی جے پی ان آرڈیننس کو کسانوں کی آزادی کے جملے کا نام دے کر درحقیقت کسانوں کو غلام بنانا چاہتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ کورونا بحران اور لاک ڈاؤن نے کاروبار بند کئے تو نوجوان بے روزگاری کے شکار ہوگئے۔ بی جے پی حکومت مبینہ سرمایہ کاری کے اعدادوشمار کے ساتھ روزگار کے سپنے دکھاتی ہے لیکن سچ یہ ہے کہ ریاست میں بی جے پی حکومت کی لاکھ کوششوں کے بعد بھی نئی انڈسٹریاں نہیں لگیں۔اور نہ ہی روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوئے۔ریاست میں 1.03کروڑ لوگ نوکری کی تلاش میں ہیں ۔محکمہ عملہ کی رپورٹ بتاتی ہے کہ یو پی میں 14.62فیصدی تعداد نوکری طلب کرنے والوں کی ہے۔

کیٹاگری میں : States

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں