21

مشہور نغمہ نگار ابھیلاش کا انتقال

سال 1085 میں آئی فلم انکش کیلئے اتنی شکتی ہمیں دینا داتا، من کا وشواس کمزور ہو نہ،جیسے مقبول گانے لکھنے والے نغمہ نگار اور رائٹر ابھیلاش اب اس دنیا میں نہیں رہے۔ بتادیں کہ کینسر کے چلتے انہوں نے آج صبح 4:00 بجے دنیا کو الوداع کہہ دیا۔ ابھیلاش گزشتہ دنوں ہی جگر کینسر سے متاثر پائے گئے تھے جس کے بعد ان کا جگر ٹرانس پلانٹ کی تیاری کی جارہی تھی لیکن حالت بگڑنے کے برف ممبئی میں ان کا انتقال ہوگیا۔
ابھیلاش نے لال چوڑا (1974) ساون کو آنے دو (1979), انکش (1986) جیسی فلموں کے گانے لکھے ہیں۔ دو دن پہلے نغمہ نگار ابھیلاش جگر کینسر سے متاثر ہونے کی جانکاری سامنے آئی تھی۔ اسی سال مارچ میں ابھیلاش کی پیٹ کی آنتوں کا بھی آپریشن ہوا تھا جس کے بعد سے انہیں چلنے پھرنے میں پریشانی آنے لگی۔ ابھیلاش نے ممبئی کے گورے گاؤں میں واقع اپنے گھر پر آخری سانس لی۔
سابق صدر گیانی زیل سنگھ کے ذریعہ کالاشری ایوارڈ سے نوازے گئے ابھیلاش کا ‘اتنی طاقت ہمیں دینا داتا’ آج بھی بہت مشہور ہے۔ یہ گانا آج ملک کے بہت سارے اسکولوں کی دعاؤں کا حصہ ہے۔ قابل ذکر ہے کہ اس گیت کا دنیا بھر میں 8 زبانوں میں ترجمہ کیا گیا ہے۔ ‘اتنی شکتی ہمیں دینا داتا’ کے علاوہ ، ابھیلاش کے ‘تمہاری یاد کے ساگر میں’ ، ‘سنساہ رے اک ندیا’ اور ‘سانجھ بھئی گھر آ جا’ جیسے گانے بھی کافی مقبول ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں