23

ٹیوشن پڑھنے گئی نابالغ طالبہ سے آبروریزی کے بعد قتل

دمکا: جھارکھنڈ کے دمکا میں جمعہ کو 12 سالہ آدیواسی طالبہ کی مبینہ طور پر اجتماعی آبروریزی کے بعد قتل کئے جانے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ اسے سنجیدگی سے لیتے ہوئے وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین نے ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل کو اس معاملے میں نوٹس لےکر سخت کارروائی کرنے کے احکامات دیئے ہیں۔ ہیمنت سورین نے ٹوئٹ کرکے اس معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل ایم وی راوکو سخت کارروائی کرنے اور اس کی اطلاع وزیر اعلیٰ دفترکو دینے کا حکم دیا۔
حادثہ کی تفصیلی اطلاع دیتے ہوئے دمکا کے پولیس سپرنٹنڈنٹ امبر لکڑا نے بتایا کہ ضلع کے رام گڑھ کے تحت پانچویں کلاس میں پڑھنے والی 12 سالہ آدیواسی طالبہ کی لاش پولیس نے جمعہ کو اس کے گاوں سے کچھ دور جنگل میں گاڑی سے برآمد کی۔ لکڑا نے بتایا کہ پہلی نظر میں نابالغ طالبہ کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کئے جانے کا خدشہ ہے، لیکن اس کی تصدیق کے لئے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاملے کی جانچ کے لئے کاٹھی کنڈ انسپکٹر اور رام گڑھ کی مشترکہ ٹیم کی قیادت میں ایک ایس آئی ٹی تشکیل کی گئی ہے۔
انہوں نے بتایا کہ جمعہ کو صبح 7 بجے طالبہ ٹیوشن پڑھنے کے لئے نکلی تھی، لیکن واپس نہیں لوٹی۔ اس پر اہل خانہ نے اس کی تلاش کی تو ٹھاڑی گاوں کے پاس جنگل کی جھاڑی میں اس کی لاش برآمد ہوئی۔ ساتھ ہی سڑک کنارے اس کی سائیکل بھی ملی، جس سے وہ ٹیوشن پڑھنے گئی تھی۔ اہل خانہ نے معاملے کی اطلاع رام گڑھ پولیس کو دی ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ نے دعویٰ کیا کہ مجرمین کو جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

کیٹاگری میں : States

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں