32

ویکسین بنانے والی کمپنیوں سے متعلقہ محکمات تبادلہ خیال کریں:مودی

نئی دہلی وزیر اعظم نریندر مودی نے تمام متعلقہ محکموں سے کہا ہے کہ وہ کورونا ویکسین بنانے والی کمپنیوں کے ساتھ بات چیت کرکے ضروری معاملات حل کریں تاکہ ویکسین جلد ہی ملک اور دنیا کی ضروریات کو پورا کرسکے ہفتہ کے روز کورونا ویکسین بنانے والی تین کمپنیوں کا دورہ کرنے کے بعد مسٹر مودی نے پیر کوتین دیگر کمپنیوں کے نمائندوں کے ساتھ ورچوئل ذرائع سے بات کی اور ویکسین کو تیار کیے جانے سے متعلق تمام امور پر تبادلہ خیال کیا۔

وزیر اعظم نے حکومت کے تمام متعلقہ محکموں سے ویکسین بنانے والی کمپنیوں کے ساتھ رابطہ کرنے اور بات چیت کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمے ان کمپنیوں کے ساتھ تمام اہم امور پر تبادلہ خیال کرکےمعاملات حل کریں تاکہ ان کمپنیوں کی کاوشیں کامیاب ہوں اوریہ ملک و دنیا کی ضروریات کو پورا کرسکیں۔

مسٹر مودی نے آج جن کمپنیوں کے نمائندوں سے بات کی ان میں پونے میں واقع جینوا بائیوفرماسیوٹیکلز لمیٹڈ حیدرآباد کی بائیوولوجیکل ای لمیٹڈ اور ڈاکٹر ریڈیز لیب لمیٹڈ شامل ہیں۔ انہوں نے ویکسین بنانے میں مصروف ان کمپنیوں کے سائنسدانوں کی تعریف کی۔ ویکسین کی ترقی کے لیے مختلف پلیٹ فارم کا بھی اس دوران تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر اعظم نے ان کمپنیوں سے ریگولیٹری عمل اورمتعلقہ معاملات کے بارے میں اپنی تجاویز اور نظریات شیئر کرنے کو کہا ہے۔ انہوں نے تجویز پیش کی کہ ان کمپنیوں کوویکسین کے بارے میں عام معلومات اور ان کے اثرات کے بارے میں لوگوں کو آسان اور عام فہم زبان میں معلومات دینی چاہیے۔ ویکسین کی تقسیم کے تناظر میں ان کی دیکھ بھال ، نقل وحمل، کولڈ اسٹوریج ہاوسز وغیرہ پربھی بات چیت کی گئی۔ ان تینوں ٹیموں کی ویکسین تجربے کے مختلف مراحل میں ہیں اور ان کے بارے میں تفصیلی اعدادوشمار اور نتائج آئندہ سال آنے شروع ہوں گے۔

قابل ذکر ہے کہ مسٹر مودی نے ہفتہ کے روز احمدآباد کے زایڈس بائیوٹیک پارک، حیدرآباد کے بھارت بایوٹیک اور پونے میں واقع سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کا دورہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں