18

حکومت کسانوں سے بلاشرط و تعصب کے بات چیت کرے گی: پوری

نئی دہلی، حکومت نے آج دہرایا کہ وہ تحریک چلارہے کسانوں سے بات چیت کرکے ان کے معاملات کو حل کرنا چاہتی ہے اور بات چیت کے لئے نہ کوئی شرط لگائی گئی ہے اور نہ ہی دل میں کوئی تعصب ہے شہری ترقیات کے مرکزی وزیر ہردیپ سنگھ پوری نے یہاں ایک پروگرام کے موقع پر نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی کی حکومت کسانوں کے تمام مسائل حل کرنے اور ان کی فلاح وبہبود کے لئے پرعزم ہے۔ وزیر داخلہ امت شاہ، وزیر دفاع راجناتھ سنگھ، زراعت اور کسانوں کی فلاح وبہبود کے وزیر نریندر سنگھ تومر نے بار بار کہا ہے کہ تحریک کررہے کسانوں کے مسائل کو بلاتعصب یا شرط کے سنا جائے گا کھلے دل سے غور و خوض کیا جائے گا۔ حکومت کسانوں کے ہرمسئلہ کو حل کرنا چاہتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کسانوں کے درمیان گمراہ کن پروپگنڈہ کیاگیا ہے کہ کم از کم سہارا قیمت (ایم ایس پی) اورمنڈی کا نظام ختم کردیا جائے گا جبکہ پنجاب میں اس برس اناج کی خرید ہدف سے کہیں زیادہ ہوئی ہے جو ایک ریکارڈ ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیراعطم نریندر مودی پارلیمنٹ میں بیان دے چکے ہیں کہ ایم ایس پی اور منڈ ی کا نظا م برقرار رہے گا۔ وزیر زراعت مسٹر تومر نے بھی ایک خط میں لکھ کر کہا ہے کہ یہ دونوں نظام قائم رہیں گے۔
ڈاکٹر پوری نے کہا کہ تحریک کررہے کسانوں کو حکومت کی طرف سے بات چیت کے لئے مدعو کیا گیا ہے۔ ہم نے کہا ہے کہ کسان ایک مقرہرہ مقام پر جمع ہوجائیں جہاں ان کے لئے ضروری سہولیات دستیاب کرائی گئی ہیں تاکہ باقی شہریوں کو دقت نہ ہو۔ انہوں نے کہاکہ بھیڑ کے ساتھ بات چیت نہیں ہوسکتی ہے۔ کسان ایک وفد کے طورپر آئیں اور حکومت ان کے ساتھ بلا شرط بات چیت کرے گی۔
کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی کے وزیراعظم مودی پر الزامات کے بارے میں پوچھے جانے پر ڈاکٹر پوری نے کہا کہ وہ مسٹر گاندھی کے الزامات کے بارے میں نہیں جانتے لیکن جہاں تک مودی حکومت کا سوال ہے تو مسٹر گاندھی دیکھیں کہ ترقی پسند اتحاد(یو پی اے) کے دس برس کے دو ر اقتدار میں کھیتی اور کسانوں کی فلاح وبہبود کے لئے جتنی رقم خرچ کی گئی اور جتنا خرچ 2014کے بعد قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے دوراقتدار میں ا ب تک ہوچکا ہے اس کا مقابلہ کرلیں تو ان کے الزامات کی سچائی سامنے آجائے گی۔
انہوں نے کہا کہ مودی حکومت نے کسانوں کی سہولیت، خوشحالی اور فلاح وبہود کے لئے بہت کام کیا ہے اور آئندہ کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ کسانوں کو اگر کوئی غلط فہمی ہے یا واقعی ان کا کوئی واجب مسئلہ ہے تو اسے دور کیا جائے گا۔
ڈاکٹر پوری اطلاعات و نشریاست کے وزیر پرکاش جاوڈیکر کی رہائش گاہ پر گرو نانک دیو کے 551ویں پرکاش فیسٹول پر سکھ برادری کی فلاح وبہبود کی سمیت میں مودی حکومت کے اقدمات پر ایک کتاب کا اجرا کرنے آئے تھے۔یہ کتاب اطلاعات و نشریات وزارت نے تیار کی ہے۔
کتاب کے اجرا کے بعد ڈاکٹر پوری نے اپنے مختصر خطاب میں کہا کہ وزیراعظم مسٹر مودی کا سکھ برادری کے ساتھ اٹوٹ تعلق ہے۔ ان کی حکومت نے پہلی بار ایسے اقدامات کئے ہیں جن سے سکھ برادری فخر محسوس کررہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں