38

ٹیسٹ چیمپئن شپ سے ابتک ٹیسٹ کرکٹ کو فروغ نہیں ملا : بارکلے

دبئی، بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی ) کے نومنتخب چیئرمین گریگ بارکلے کا خیال ہے کہ عالمی ٹسٹ چیمپئن شپ سے ابتک ٹیسٹ کرکٹ کو کچھ خاص فروغ نہیں ملا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ٹیسٹ چیمپئن شپ سے ابھی اتنا فائدہ نہیں ملا ہے جتنی کی توقع تھی۔ آئی سی سی چیئرمین کے اس بیان سے اس چیمپئن شپ کے مستقبل پر شبہ پیدا ہوگیا ہے ۔ بارکلے نے کہا کہ کورونا وبا کا اثر بھی اس چیمپئن شپ پر ہوا ہے۔
بارکلے نے کہا کہ مجھے نہیں لگتا کہ عالمی ٹیسٹ چیمپئن شپ سے ٹیسٹ کرکٹ کو کچھ خاص فروغ ملا ہے ۔ٹیسٹ چیمپئن شپ کے انعقاد کا مقصد ٹیسٹ کرکٹ میں دلچسپی پیدا کرنا تھا۔مجھے نہیں لگتا کہ عالمی ٹیسٹ چیمپئن شپ نے ابتک وہ حاصل کیا ہے جس کی توقع تھی۔
خیال رہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے حال ہی میں ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کیلئے پوائنٹس سسٹم میں تبدیلی کی تھی جس میں ٹیموں کی درجہ بندی مجموعی پوائنٹس کی بجائے پوائنٹس کی اوسط پر ہوگی۔
بارکلے چاہتے ہیں کہ اس وقت ٹیسٹ چیمپئن شپ کا پہلا ایڈیشن مکمل ہوجائے ، لیکن ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ منتظمین کو چاہئے کہ وہ ٹیسٹ چیمپئن شپ پر غور کریں اور معاملات کو مختلف نقطہ نظر سے دیکھیں۔
گریگ بارکلے نے کہا ، “میری ذاتی رائے یہ ہے کہ ہم کووڈ ۔19 میں اپنی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں اور ہم نے پوائنٹس کے لئے ایک نیا انتظام کیا ہے۔” لیکن ایک بار ہم ایسا کرنے کے بعد ، ہمیں دوبارہ بات کرنی چاہئے کیونکہ مجھے یقین نہیں ہے کہ آیا ٹیسٹ چیمپئن شپ واقعی اپنے مقصد کو حاصل کرنے میں کامیاب رہی جس کے لئے اسے چار یا پانچ سال پہلے غور کرنے کے بعد بنایا گیا تھا۔
انہوں نے کہا ، “میرے خیال میں ہمیں کیلنڈر کے حساب سے دیکھنا چاہئے اور کرکٹرز کو ایسی صورتحال میں نہیں ڈالنا چاہئے کہ معاملات خراب مزید خراب ہو جائیں اور ہم کوئی فائدہ نہ اٹھا سکیں ۔”
بارکلے نے کہا ، “میرا خیال ہے کہ ایسے کئی ٹسٹ میچ کھیلنے والے ممالک ہیں جن کا اس ٹورنامنٹ میں حصہ لینا بہت مشکل ہے۔ ٹیسٹ کرکٹ کی اپنی پہچان ہے اور میں اس کے ہر پہلو پر غور کر رہا ہوں۔ بہت کم ممالک اس نظام کو برداشت کرنے اور اسے کھیلنے کے اہل ہیں۔ مالی نقطہ نظر سے ، تمام ممالک کے لئے اس میں حصہ لینا مشکل ہے۔انہوں نے چیمپئن شپ کے سلسلے میں موجودہ کرکٹ کیلنڈر میں مسلسل ایک کے بعد ایک سیریز ہونے اور دنیا بھر میں ہورہی ٹی-20 لیگ پر تشویش ظاہر کی ہے۔
انہوں نے کہا ، “باہمی کرکٹ رکن ممالک کے لئے اہم ہے۔ آئی سی سی کرکٹ مقابلوں کا انعقاد بہتر طریقہ سے کرتا آیا ہے۔ تمام ممالک کو اس میں حصہ لینے کا موقع ملنا چاہئے۔ میں آئی سی سی ایونٹ کو برقرار رکھنے کا مداح ہوں لیکن ساتھ ہی ساتھ ممبر ممالک کوباہمی کرکٹ کے مواقع فراہم کرنے کی بھی وکالت کرتا ہوں۔

کیٹاگری میں : Sports

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں