42

شیئربازار میں گراوٹ کا سلسلہ جاری

ممبئی، امریکی سنٹرل بینک فیڈرل ریزرو کے طویل عرصہ تک شرح سود بنے رہنے کے اشارہ سے عالمی بازار میں آئی گراوٹ سے بڑے پیمانے پر شیئر بازار میں آج بھی افراتفری کا ماحول رہا۔
بی ایس ای کا حساس انڈیکس سینسیکس 570.60 پوائنٹس یعنی 0.85 فیصد گر کر 66230.24 پوائنٹس اور نیشنل اسٹاک ایکسچینج (این ایس ای) نفٹی 159.05 پوائنٹس یعنی 0.8 فیصد کی گراوٹ کے ساتھ 19742.35 پوائنٹس پر آگیا۔ اسی طرح بی ایس ای مڈ کیپ 0.99 فیصد گر کر 31,992.41 پوائنٹس اور اسمال کیپ 0.98 فیصد گر کر 37,043.75 پوائنٹس پر آگیا۔
اس عرصے کے دوران بی ایس ای میں کل 3793 کمپنیوں کے شیئرزکا کاروبار ہوا جن میں سے 2337 میں کمی جبکہ 1317 کی قیمتوں میں اضافہ جبکہ 139 میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔ اسی طرح نفٹی کی 34 کمپنیاں سرخ رنگ میں تھیں جبکہ باقی 16 سبز رنگ میں تھیں۔
بی ایس ای میں ٹیک گروپ کے 0.06 فیصد کے فائدہ کے علاوہ، باقی 19 گروپوں میں کمی کا رجحان رہا۔
بین الاقوامی سطح پر فروخت کا دباؤ تھا۔ اس عرصے کے دوران برطانیہ کے ایف ٹی ایس ای میں 0.65، جرمنی کے ڈی اے ایکس میں 1.11، جاپان کے نکیئی میں 1.37، ہانگ کانگ کے ہینگ سینگ میں 1.29 اور چین کے شنگھائی کمپوزٹ میں 0.77 فیصد کی کمی واقع ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں