17

سراج نے نسلی تبصرے کے معاملے میں مثال قائم کی : ناتھن لیون

سڈنی ، آسٹریلیائی ٹیم کے ٹاپ آف اسپنر ناتھن لیون نے بدھ کے روز کہا کہ ناظرین کے نسلی تبصرے کے معاملے میں ہندوستانی تیزگیندباز محمدسراج نے ایک مثال قائم کی جس سے مستقبل میں اور کرکٹروں کا حوصلہ بڑھے گا اور وہ ان حرکتوں کے خلاف مضبوط بنیں گے۔
لیون نے کہا کہ کرکٹ کا کھیل سب کے لئے ہے اور اس میں کسی بھی قسم کی نسل پرستی یا بدسلوکی کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ واضح رہے کہ سراج اور جسپریت بمراہ کو سڈنی کرکٹ گراؤنڈ میں تیسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے اور چوتھے دن ناظرین کے ذریعہ نسلی تبصرے کا سامنا کرنا پڑا تھا جس کے بعد سیکیورٹی اہلکاروں نے چھ ناظرین کو گراؤنڈ سے باہر کردیا تھا اور اس معاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔
ہندوستانی ٹیم نے بھی تیسرے دن کے کھیل کے بعد باضابطہ طور پر شکایت درج کروائی تھی ، جبکہ آئی سی سی نے اس معاملے پر کرکٹ آسٹریلیا سے رپورٹ طلب کی ہے۔
لیون نے کہا ، “کھیل میں کسی بھی قسم کے نسلی تبصرے کی گنجائش نہیں ہے۔ لوگ سمجھتے ہیں کہ وہ مذاق کر رہے ہیں لیکن اس سے لوگوں پر بہت برا اثر پڑ سکتا ہے۔ اگر کسی کھلاڑی کو لگتا ہے کہ اس سلسلے میں میچ کے حکام سے شکایت کرنے کی ضرورت ہے تو اسے کرنا چاہئے۔ اس وقت ، میدان پر سیکیورٹی کے بہت سے اہلکار تعینات ہوتے ہیں ، جو نسلی تبصرے کرنے والے ناظرین کو فوری طور پر باہر نکال سکتے ہیں۔

کیٹاگری میں : Sports

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں