23

دانش علی نے رمیش بدھوڑی کے خلاف اوم برلا کو خط لکھا

نئی دہلی، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے رکن پارلیمنٹ کنور دانش علی نے قابل اعتراض تبصروں کے سلسلے میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رکن پارلیمنٹ رمیش بدھوڑی کے خلاف جمعہ کو لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا کو خط لکھ کر معاملے کو استحقاق کمیٹی کے پاس بھیجنے کی درخواست کی مسٹر علی نے جمعہ کو مسٹر برلا کو لکھے ایک خط میں کہا، “میں بی جے پی کے ایک رکن پارلیمنٹ رمیش بدھوڑی کی لوک سبھا میں ‘چندریان کی کامیابی’ پر بحث کے دوران دی گئی تقریر کے بارے میں گہرے درد کے ساتھ لکھ رہا ہوں۔ انہوں نے میرے خلاف بہت ہی نازیبا اور قابل اعتراض الفاظ کا استعمال کیا۔

انہوں نے کہا کہ وہ بی جے پی ایم پی کے خلاف ضابطہ222، 226 اور 227 کے تحت نوٹس دینا چاہتے ہیں۔ مسٹر بدھوڑی نے لوک سبھا میں مسٹر علی کے خلاف ‘دہشت گرد’، ‘انتہا پسند’ اور کئی قابل اعتراض الفاظ کا استعمال کیا۔

بی ایس پی ایم پی نے کہا، “یہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے اور حقیقت یہ ہے کہ یہ آپ کی قیادت میں پارلیمنٹ کی نئی عمارت میں یہ سب ہوا ،اس عظیم ملک کے اقلیتی رکن اور ایک منتخب رکن پارلیمنٹ کے طور پر میرے لیے واقعی دل توڑنے والا ہے۔”

دراصل، مسٹر بدھوڑی کل لوک سبھا میں چندریان -3 کی کامیابی پر بول رہے تھے۔ اسی دوران مسٹر علی نے تبصرہ کیا، جس کے بعد ناراض بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے بی ایس پی رکن پارلیمنٹ کے خلاف قابل اعتراض اور غیر پارلیمانی الفاظ کا استعمال کیا، تاہم وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے اس معاملے پر ایوان میں افسوس کا اظہار کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں