45

دنیا کرکٹ کے ذریعے ہندوستان سے جڑ رہی ہے: مودی

وارانسی، وزیر اعظم نریندر مودی نے کھیلوں اور کھلاڑیوں کی ترقی کے تئیں اپنے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی اقتصادی ترقی میں کھیلوں کا کردار اہم ہے اور آج پوری دنیا کرکٹ کے ذریعے ہندوستان سے جڑ رہی ہے۔
وارانسی میں 451 کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والے بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم کا سنگ بنیاد رکھنے کے موقع پر مسٹر مودی نے ہفتہ کو کہا کہ ان کی حکومت کا ماننا ہے کہ کھیلوں کے بنیادی ڈھانچے کی مضبوطی کا نہ صرف کھیلوں کی پرورش پر مثبت اثر پڑتا ہے۔ نوجوان کھیلوں کا ٹیلنٹ بلکہ اس کا اثر ملکی معیشت پر بھی اچھا ہے۔ وارانسی میں بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم کی تعمیر سے کھیلوں کو مقبول بنانے اور نوجوانوں میں کھیل کی صلاحیتوں کو پروان چڑھانے میں مدد ملے گی۔ ملک میں کھیلوں کے نئے انفراسٹرکچر سے بیٹیاں مستفید ہوں گی۔ اب بیٹیوں کو کھیلوں کی تربیت کے لیے دور نہیں جانا پڑے گا۔
انہوں نے کہا کہ نئی تعلیمی پالیسی میں کھیلوں کو بھی اہم مقام دیا گیا ہے۔ ملک کی تمام ریاستوں میں کھیلوں کو فروغ دیا جا رہا ہے۔ ملک میں کھیلوں کے ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں، اب ضرورت صرف ان ٹیلنٹ کو تلاش کرنے اور ان کو نکھارنے کی ہے اور اس سمت میں حکومت ملک کے کونے کونے میں کھلاڑیوں کی شناخت بھی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کھیلوں کے حوالے سے لوگوں کا رویہ اب بدل گیا ہے کیونکہ لوگوں نے سمجھ لیا ہے کہ جو کھیلے گا وہ پھلے پھولے گا اور یہ ملک میں کھیلوں کی ترقی کے لیے ایک اچھی علامت ہے۔
چین کے شہر ہانگزو میں آج سے شروع ہونے والے 19ویں ایشیائی کھیلوں میں حصہ لینے والے ہندوستانی کھلاڑیوں کو مبارکباد دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کی کارکردگی ہندوستان کو ایک نئی شناخت دلانے میں مددگار ثابت ہوگی۔
مسٹر مودی نے کہا، ’’کچھ مہینے پہلے میں شہڈول گیا تھا۔ یہاں کچھ نوجوانوں سے ملنے کا موقع ملا۔ اس کی باتوں سے متاثر ہوا۔ وہاں کے نوجوانوں نے کہا کہ ہمارے یہاں منی برازیل ہے۔ ہمارے گھر میں ایک فٹ بال کھلاڑی ہے۔ ایک نے بتایا کہ ہمارے گھر میں تین نسلوں سے فٹ بال کھیلا جاتا ہے۔ یہ کھیلوں کے تئیں ملک کے بدلے ہوئے رویے کی عکاسی کرتا ہے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ وارانسی میں تعمیر ہونے والا بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم ہندوستان کا پہلا ملٹی لیول اسپورٹس کمپلیکس ہوگا، جسے معذور افراد کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے بنایا جا رہا ہے۔ یہ اسٹیڈیم وارانسی کے نوجوانوں کے لیے ہی نہیں بلکہ پوروانچل کے لیے بھی ایک اعزاز ثابت ہوگا۔ اس اسٹیڈیم کی تکمیل کے بعد 30 ہزار سے زائد تماشائی یہاں بیٹھ کر میچز دیکھ سکیں گے۔ جب سے اس اسٹیڈیم کی تصویریں سامنے آئی ہیں، کاشی کا ہر باشندہ انہیں دیکھ کر پرجوش ہو گیا ہے۔
مسٹر مودی نے کہا کہ آج دنیا کرکٹ کے ذریعے ہندوستان سے جڑ رہی ہے۔ کرکٹ کھیلنے کے لیے نئے ممالک آگے آرہے ہیں۔ ظاہر ہے آنے والے دنوں میں کرکٹ میچوں کی تعداد میں اضافہ ہونے والا ہے۔ جب میچز کی تعداد بڑھے گی تو نئے اسٹیڈیمز کی ضرورت ہوگی۔ پھر بنارس کا یہ انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم یہ مطالبہ پورا کرے گا۔ وہ پورے پوروانچل کا چمکتا ہوا ستارہ بننے جا رہا ہے۔
پی ایم مودی نے اپنے خطاب کی شروعات ہر ہر مہادیو کے نعرے سے کی۔ اس نے کہا، ’’آج مجھے پھر بنارس آنے کا موقع ملے گا۔ انہوں نے کہا، “آج میں ایک ایسے دن کاشی آیا ہوں جب ہندوستان ’شیو شکتی بندو‘ تک چاند کا ایک مہینہ پورا کر رہا ہے۔ شیو شکتی کا مطلب ہے وہ جگہ جہاں ہمارا چندریان پچھلے مہینے کی 23 تاریخ کو اترا تھا۔ شیو شکتی کی ایک جگہ چاند پر ہے اور دوسری جگہ میری کاشی میں ہے۔ یہ اسٹیڈیم بھگوان شیو کی تھیم پر بنایا جائے گا۔
اس سے پہلے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ کرکٹ پوری دنیا کو جوڑنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ وہ کاشی میں بننے والے اسٹیڈیم کے لیے بی سی سی آئی کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ بی سی سی آئی کے عہدیداروں اور سابق کرکٹرز سنیل گواسکر، سچن ٹنڈولکر اور دیگر کا خیرمقدم کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو سالوں کے دوران انہوں نے پورے ملک میں کام کا کلچر دیکھا ہے۔ بے مثال ترقی ہوئی ہے۔ ملک میں فٹ انڈیا، اسپورٹس انڈیا سمیت تمام بنیادی ڈھانچے کو تیار کیا گیا ہے۔
سٹیج پر موجود بی سی سی آئی کے صدر راجر بنی اور سیکرٹری جئے شاہ کے علاوہ نائب صدر راجیو شکلا نے وزیر اعظم کو یادگاری کے طور پر کرکٹ بلے کی شخصیت پیش کی جبکہ سچن ٹنڈولکر نے انہیں ہندوستانی ٹیم کی جرسی پیش کی۔ مسٹر مودی نے سنیل گواسکر اور روی شاستری سے مصافحہ کیا اور ان کی خیریت دریافت کی۔
اس سے پہلے مسٹر مودی فضائیہ کے ایک طیارے میں ہوائی اڈے پر پہنچے جہاں وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے ان کا استقبال کیا۔ مسٹر مودی ہیلی کاپٹر سے پولس لائن گراؤنڈ پہنچے جہاں سے وہ سی ایم یوگی کے ساتھ کھلی گاڑی میں گنجاری میں جلسہ عام میں پہنچے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں